ڈائپرریشزسے بچاؤ کے لئے احتیاط اور خاص علاج

2,434

ریشز عموماًگرمی اور گیلے پن کی وجہ سےہوتے ہیں ۔ بچوں کی جلد چونکہ بہت حساس ہوتی ہے اس وجہ سےاگر بچوں کا ڈائپر وقت پر تبدیل نہ کیا جائے تو ان کی جلد پر سرخ دھبے اور لکیریں پڑ جاتی ہیں اور سوزش ہو جاتی ہے ۔ اگر یہ ریشز بڑھ جائیں تو ان میں جلن اور خارش بھی ہونے لگتی ہے جس سے بچے بے حد پریشان ہو جاتے ہیں ۔
اگر ڈائپر پہنانے میں تھوڑی سی احتیاط کر لی جائے تو اس سے بچا جا سکتا ہے ۔

 

احتیاط

 

٭ تین سے چار گھنٹوں سے زیادہ بچوں کو ڈائپر میں رہنے نہ دیں اس کے بعد ڈائپر تبدیل کر لیں ۔
٭ ہمیشہ معیاری کمپنی کا ڈائپر استعمال کریں ۔
٭ بعض اوقات ڈائپر بہت زیادہ ٹائٹ ہوجائے یا صحیح طرح فٹ نہ ہو تو بھی ریشز ہو سکتے ہیں ۔
٭ کبھی بچے کی غذاؤں میں ٹھوس غذاؤں کا استعمال یا اینٹی بائیو ٹک ادویات کا زیادہ عرصے تک استعمال بھی ڈائپرریشزکی وجہ بن جاتا ہے۔
٭ بہت زیادہ صابن یاالکوحل اور خوشبو والے وائپس استعمال نہ کریں۔ اس سے جلد بہت خشک ہوجاتی ہے جو ڈائپرریشزکی وجہ بن جاتا ہے ۔
٭ ڈائپر کی تبدیلی کے دوران بچوں کی جلد کو لازمی دھلائیں۔ خشک کرنے کے لئے زیادہ نہ رگڑیں بلکے کسی نرم تولیہ سے ہلکے ہاتھ سے خشک کریں۔

 

گھریلو ٹوٹکے

 

بیکنگ سوڈا

 

بیکنگ سوڈا اپنے اندر بہت سی خوبیاں چھپائے ہوئے ہے چار کپ پانی میں دو چمچ بیکنگ سوڈا شامل کر کے اچھی طرح حل کر کے رکھ لیں جب بھی
ڈائپر تبدیل کریں اس پانی سے حساس اور متاثرہ حصے کو صاف کریں بہت جلدریشزختم ہو جاینگے۔

 

کھوپرے کا تیل

 

کھوپرے کا تیل باآسانی ہر جگا دستیاب ہوتا ہے اینٹی فنگل اور مااسچرائجنگ سے بھرپور یہ تیل بیکٹیریا سے بھی تحفظ فراہم کرتا ہے ڈائپر کی تبدیلی کے دوران کھوپرے کا تیل جلد پر لگائیں ۔

 

انڈے کی سفیدی

 

انڈے کی سفیدی بھی ڈائپرریشز کو ختم کرنے کے لئے استعمال کی جا سکتی ہے تین سے چار انڈوں کی سفیدی جما کر لیں متاثرہ حصے پر لگائیں چند دنوں میں ڈائپرریشز ختم ہو جائیں گے۔

loading...
تبصرے
Loading...