بنا کسی مشقت کے وزن کھٹائیں

4,991

وزن کم کرنے کے لئے لمبے عرصے تک کسی خاص ورزش یا غذا کا استعمال خاصا مشکل کام ہے لیکن بہت سے طریقے ایسے ہیں جن کے ذریعے آپ کم کیلوریز لے سکتے ہیں۔
یہ طریقے ناصرف وزن کم کرتے ہیں بلکہ آئندہ بھی وزن کو بڑھنے نہیں دیتے۔
بغیر کسی خاص غذا یا ورزش کے وزن کم کرنے کے طریقے:

۱۔آہستہ آہستہ اور اچھی طرح چبا کر کھائیں:

آپ نے اپنی ضرورت کے مطابق مناسب غذا لے لی ہے اس کا تعین دماغ کرتاہے لیکن اس میں تھوڑا وقت لگتا ہے۔
اچھی طرح چبا کر کھانے سے کھانے کی رفتار کم ہوتی ہے ا س طرح جلد پیٹ بھر اہوا محسوس ہوتا ہے اور کم کھانا کھایا جاتا ہے ۔ زیادہ تیزی سے کھانا وزن کو بڑھانے میں مدد دیتا ہے۔ تحقیق سے ثابت ہوتا ہے کہ تیزی سے کھانے والوں کا آہستہ کھانے والوں کی نسبت زیادہ وزن بڑھتا ہے ۔ آہستہ آہستہ چبا کر کھانے میں آپ کا کم کیلوریز میں پیٹ بھر جائے گا۔ وزن کم کرنے اور موٹاپے سے بچنے کا آسان طریقہ ہے۔

۲۔ مضر صحت کھانے کے لیے چھوٹی پلیٹ استعمال کریں:

پہلے وقتوں کے مقابلے میں آجکل بڑے سائز کی پلیٹیں استعمال ہونے لگی ہیں۔ جب چھوٹی پلیٹوں میں کھایا جاتا تھا تو کم کھانے سے بھی پلیٹ بھری ہوئی لگتی تھی جبکہ اب بڑی پلیٹ میں جتنا کھانا ڈال لیں وہ کم لگتا ہے اور آپ اس میں مزید کھانا ڈالنا چاہتے ہیں۔ اس لیے جب بھی مضر صحت کھانا کھائیں چھوٹی پلیٹ میں کھائیں جبکہ صحت بخش کھانے کے لیے بڑی پلیٹ استعمال کریں۔

۳۔ زیادہ پروٹین لیں:

پروٹین آپ کی بھوک پر گہرا اثر ڈالتے ہیں اس کے استعمال سے بھوک کم لگتی ہے اور کم کیلوریز میں بھی پیٹ بھرا ہوا محسوس ہوتا ہے ۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ پروٹین ایسے ہارمونز پر اثر انداز ہوتے جو بھوک کی کیفیت کو کم کرتے ہیں ۔
ایک تحقیق کے مطابق روزانہ ۱۵ سے ۳۰ فیصد زائد پروٹینز لینے والے لوگوں نے ۱۲ ہفتے میں ۱۱ پاؤنڈ تک وزن کم کیا ۔ اگر آپ ناشتے میں اناج سے بنی چیزیں کھاتے ہیں تو اس کی جگہ پروٹین جیسے انڈے وغیرہ کھانا شروع کردیں۔ اس طرح دیر تک پیٹ بھرا رہے گا اور دوپہر میں کم کھایا جائے گا۔ دہی ، مچھلی ، مرغی، بادام اور دالیں پروٹین سے بھرپور غذائیں ہیں۔

۴۔ مضر صحت کھانا اپنی نظروں سے دور رکھیں:

کھانے پینے کی چیزیں سامنے ہوں تو انھیں دیکھ کر بھوک لگتی ہے اور کھانے کا دل چاہتا ہے۔
ایک تحقیق کے مطابق جن گھروں میں زیادہ کیلوریز والے کھانے سامنے ہوتے ہیں اس گھر کے افراد ان افراد کے مقابلے زیادہ موٹے ہوتے ہیں جن کے گھروں میں پھل سامنے رکھے ہوتے ہیں ۔ اس لیے مضر صحت کھانوں کو ایسی جگہ رکھیں جہاں نظر نہ جاسکے جبکہ صحت بخش کھانوں کو نظروں کے سامنے رکھیں تاکہ جب بھی آپ کو بھوک لگے آپ اچھی چیز کھائیں۔

۵۔ فائبر والی غذا کھائیں:

فائبر والی غذاؤں میں پیٹ دیر تک بھرا محسوس ہوتا ہے ۔
ایک تحقیق کے مطابق ایک خاص قسم کے فائبر جو وسکس فائبر کہلاتا ہے ۔وزن کم کرنے میں بہت مددگار ہے اور اس سے کھانا کھانے کی کم خواہش ہوتی ہے۔ یہ فائبر پھلوں ، جوء ، کینو اور السی کے بیجوں میں پایا جاتا ہے۔

۶۔ زیادہ پانی پئیں:

کھانے سے پہلے پانی پینے سے کھانا کم کھایا جاتاہے اس طرح وزن کم کرنے میں مدد ملتی ہے۔
ایک تحقیق کے مطابق کھانے سے آدھا گھنٹہ پہلے آدھا لیٹر یعنی دو گلاس پانی پینے سے بھوک کم ہوجاتی ہے اور ایسے لوگ ۱۲ ہفتوں میں ۴۴ فیصد تک زیادہ وزن کم کرلیتے ہیں۔ اسی طرح اگر آپ زیادہ کیلوری والے سوڈا ڈرنکس اور جوس کی جگہ بھی پانی استعمال کریں تو اس کا بھی آپ کی صحت پر اچھا اثر پڑے گا۔

۷۔کھاتے وقت برقی آلات استعمال نہ کریں:

کھانا کھاتے وقت صرف کھانے پر دھیان دیں اس طرح آپ کم کیلوریز کھائیں گے ۔ ایسے لوگ جو کھانا کھاتے وقت ٹی وی دیکھ رہے ہوں یا کمپیوٹر اور موبائل استعمال کر رہے ہوں تو وہ ضرورت سے زیادہ کھاسکتے ہیں ۔ کھانے کے دوران برقی آلات استعمال کرنے والے لوگ ۲۵ فیصد زیادہ کیلوریز لے سکتے ہیں۔ اگر آپ کھانا کھاتے وقت ہمیشہ ان چیزوں کا استعمال کرتے ہیں تو حاصل ہونے والی کیلوریز صحت پر غلط اثر ڈالیں گی۔

۸۔میٹھے مشروبات سے پرہیز کریں:

میٹھے مشروبات سے زیادہ کیلوریز حاصل کی جاسکتی ہیں کیونکہ ان سے پیٹ جلدی نہیں بھرتا ۔ اس لیے میٹھے مشروبات سے پرہیز بھی وزن کم کرنے اور بہت سی بیماریوں سے بچاتا ہے۔

تبصرے
Loading...