وہ قدرتی اشیاء جو ‘میٹابولزم ‘ کے لئے فائدہ مند ہیں

538

اس میں کوئی شک اور شبہ باقی نہیں کہ انسانی حیات اور دنیا کے لیے سب سے ذیادہ فائدہ مند چیزیں ـقدرتی ہی ہوتی ہیں۔اگرچہ میڈیکل سائنس میں بے شمار ترقی کی بدولت ایسی چیزیں بھی موجود ہیں، جو انسانی جسم اور حیات کو بہتر بنانے میں مدد فراہم کرتی ہیں، تاہم ان کا مقابلہ پھر بھی قدرتی اشیاء سے نہیں کیا جاسکتا۔پھل، سبزیاں، پانی اور دودھ جیسی قدرتی اشیاء کا شمار ان چیزوں میں ہوتا ہے جو انسانی جسم کے ’میٹابولزم‘ کے نظام کو مضبوط بناتی ہیں۔

میٹابولزم‘ در اصل اس نظام کو کہا جاتا ہے، جس کے ذریعے کھانے پینے کی چیزیں مادہ حیات میں تبدیل ہوجاتی ہیں، یعنی غذا کے جسم کے جز میں تبدیل ہونے کو ’میٹابولزم‘ کہتے ہیں۔ہیلتھ جرنل میں شائع مضمون کے مطابق انڈے، گوشت، پانی، دودھ، گندم سے بنی غذائیں، کافی اور گرین ٹی سمیت دیگر چیزیں ’میٹابولزم‘ کے لیے مفید ہوتی ہیں، ان چیزوں سے انسانی جسم مضبوط اور توانا بنتا ہے۔

یہ چند درج ذیل اشیاء ’میٹابولزم‘ کے نظام کو مضبوط بناتی ہیں :

دودھ

دودھ جہاں انسانی جسم کو خوبصورت بنانے میں کردار ادا کرتا ہے، وہیں یہ ہڈیوں کو بھی مضبوط کرتا ہے۔

بغیر چربی والا گوشت

آئرن کی وجہ سے گوشت انسانی جسم کے لیے فائدہ مند ہوتا ہے۔


میٹابولزم کوتیز کرنے کے پانچ آسان طریقے


پانی

اگر کہا جائے کہ پانی کو قدرتی اشیاء میں سب سے نمایاں اہمیت حاصل ہے تو کچھ غلط نہ ہوگا، پانی انسانی جسم کے نظام کو توانا رکھنے سمیت اس میں کیلوریز اور طاقت کو بڑھاتا ہے۔

ہری/ثابت /سرخ مرچ

ذیادہ ترلوگ مرچوں کو پیٹ کے لیے خطرناک سمجھتے ہیں، تاہم مرچوں میں وٹامن سی پائی جاتی ہے، جو انسانی صحت کے لیے لازمی ہے۔ لیکن اس کا استعمال اعتدال کے ساتھ کیا جانا چاہیئے۔

کافی/ گرین ٹی

کافی اور گرین ٹی میں پائے جانے والے اجزاء ’میٹابولزم‘ کے نظام کو درست رکھنے میں مدد دیتے ہیں۔

انڈے کی سفیدی

انڈا پروٹین، وٹامن ڈی اور امینو ایسڈ کی وجہ سے میٹابولزم کے لیے بہتر ہے۔

مسور کی دال

سبزیوں کی طرح دالیں بھی ’میٹابولزم‘ کے لیے بہترین ہوتی ہیں، تاہم مسور کی دال میں آئرن پائی جاتی ہے، اس لیے وہ سب سے ذیادہ فائدہ مند ہوتی ہے۔


5طریقوں سے اپنا میٹابولزم تیز کریں اور وزن گھٹائیں


شاید آپ یہ بھی پسند کریں
تبصرے
Loading...