health issues – ایچ ٹی وی اردو https://htv.com.pk/ur Fri, 21 Feb 2020 07:39:29 +0000 ur hourly 1 https://htv.com.pk/ur/wp-content/uploads/2017/10/cropped-logo-2-32x32.png health issues – ایچ ٹی وی اردو https://htv.com.pk/ur 32 32 بار بار پیشاب آنے کی کیا وجوہات ہوسکتی ہے ؟ https://htv.com.pk/ur/health/urine-problems Wed, 03 Jul 2019 08:00:12 +0000 https://htv.com.pk/ur/?p=33477

جسم سے پیشاب کا اخراج بہت اہمیت رکھتا ہے کیونکہ گردے اضافی پانی اور کچرے کو خون سے فلٹر کرتا ہے اور اسے مثانے میں منتقل کردیتا ہے۔اوسطاً ایک فرد روزانہ چار سے چھ بار پیشاب کرتا ہے اور چار سے پانچ گھنٹے کے اندرباتھ روم کا ایک چکر لگ ہی جاتا ہے۔تاہم اگر ہر […]

The post بار بار پیشاب آنے کی کیا وجوہات ہوسکتی ہے ؟ appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>

جسم سے پیشاب کا اخراج بہت اہمیت رکھتا ہے کیونکہ گردے اضافی پانی اور کچرے کو خون سے فلٹر کرتا ہے اور اسے مثانے میں منتقل کردیتا ہے۔اوسطاً ایک فرد روزانہ چار سے چھ بار پیشاب کرتا ہے اور چار سے پانچ گھنٹے کے اندرباتھ روم کا ایک چکر لگ ہی جاتا ہے۔تاہم اگر ہر کچھ دیر بعد یعنی ایک گھنٹے سے دو گھنٹے کے دوران ہی پیشاب آنے لگے تو یہ غیر معمولی بات ہوتی ہے اوراگر ایسا ہورہا ہے تو اس کی وجوہات یہ ہوسکتی ہیں۔

زیادہ پانی پینا

اگر آپ زیادہ مقدار میں پانی پینا شروع کردیں تو آپ کے واش روم کے چکر بھی زیادہ لگتے ہیں، اور اگر کچھ زیادہ ہی چکر لگ رہے ہیں، تو دیکھیں آپ کتنا پانی پی رہے ہیں، عام طور پر زیادہ پانی پینے کے نتیجے میں جسم میں نمکیات کی کمی ہونے لگتی ہے جس کا عندیہ پیشاب کی بالکل شفاف رنگت یعنی سفید رنگت سے ہوتی ہے، جو بتدریج صحت کے لیے خطرہ ثابت ہوسکتا ہے، تو اس کا ایک آسان اور سادہ سا حل بہت زیادہ کی جگہ مناسب مقدار میں پانی پینا ہے۔

چائے ، کافی یا سافٹ ڈرنکس کابہت زیادہ استعمال

مشروبات جیسے کافی، چائے یا کولڈ ڈرنکس وغیرہ زیادہ مقدار میں پینا بھی ہر وقت پیشاب آنے کی وجہ بن سکتا ہے، ان مشروبات کے نتیجے میں جسم میں نمک اور پانی کی مقدار بڑھتی ہے اور گردوں ان کی صفائی کرتا رہتا ہے جس کے باعث زیادہ پیشاب آتا ہے۔

پیشاب کی نالی میں سوزش کا ہوجانا

اس مرض میں مثانہ اور گردے متاثر ہوسکتے ہیں اور اس انفیکشن کے باعث مثانے ورم کے شکار بھی ہوجاتے ہیں جس کے باعث ایسا لگتا ہے کہ 24 گھنٹے پیشاب آرہا ہے حالانکہ جسمانی نظام میں اتنا سیال ہوتا نہیں، ایسے حالات میں ڈاکٹر سے فوری رجوع کرنا چاہیے۔


یہ بھی پڑھئے : پیشاب کے رنگ و بو میں تبدیلی، کئی بیماریوں کا خطرہ


 ذیابیطس کی بیماری

جب آپ ذیابیطس کے شکار ہوجائیں تو آپ کا جسم خوراک کو شوگر میں تبدیل کرنے میں زیادہ بہتر کام نہیں کرپاتا جس کے نتیجے میں دوران خون میں شوگر کی مقدار بڑھ جاتی ہے اور جسم اسے پیشاب کے راستے باہر نکالنے لگتا ہے، یعنی ہاتھ روم کا رخ زیادہ کرنا پڑتا ہے۔ تاہم اس مرض کے شکار اکثر افراد اس خاموش علامت سے واقف نہیں ہوتے اور نہ ہی اس پر توجہ دیتے ہیں۔ خاص طور پر رات کو جب ایک یا 2 بار ٹوائلٹ کا رخ کرنا تو معمول سمجھا جاسکتا ہے تاہم یہ تعداد بڑھنے اور آپ کی نیند پر اثرات مرتب ہونے کی صورت میں اس پر توجہ مرکوز کرنے کی فوری ضرورت ہوتی ہے۔

بہت کم پانی پینا

جی ہاں واقعی بہت زیادہ کی جگہ اگر بہت کم پانی پیا جائے تو بھی یہ مسئلہ ہوسکتا ہے کیونکہ اس سے مثانہ متاثر ہوتا ہے اور وہ دماغ کو یہ احساس دلاتا رہتا ہے کہ پیشاب آرہا ہے جبکہ ایسا ہوتا نہیں، اگر آپ پانی کم پیتے ہیں مگر ہر وقت پیشاب آنے کا احساس ہوتا ہے تو پانی پینے کی مقدار بڑھادیں۔

گردوں میں پتھری کا اشارہ

گردے کی پتھری پیشاب کی نالی کے کسی بھی حصے کو متاثر کرسکتی ہے اور وہاں سے ان کا نکلنا کافی تکلیف دہ ثابت ہوتا ہے، مگر پیشاب زیادہ آنے لگتا ہے جس کے ساتھ تکلیف بھی ہوتی ہے۔

مخصوص ادویات کا استعمال

مختلف ادویات جیسے ہائی بلڈ پریشر کے لیے لی جانے والی ادویات کے نتیجے مین یہ مسئلہ لاحق ہوسکتا ہے یا سکون آور ادویات کا بھی یہ سائیڈ ایفیکٹ دیکھنے میں آتا ہے جس کے استعمال کے باعث

کوئی سنگین مسئلہ درپیش ہوسکتا ہے

ہر وقت پیشاب آنے پر ڈاکٹر سے رجوع ضرور کرنا چاہیے کیونکہ اس کے پیچھے کوئی سنگین طبی مسئلہ بھی چھپا ہوسکتا ہے۔


یہ بھی جانئے : بچوں کو بستر پر پیشاب کرنے سے کیسے روکیں


The post بار بار پیشاب آنے کی کیا وجوہات ہوسکتی ہے ؟ appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
سینٹری پیڈز کا استعمال اور احتیاط https://htv.com.pk/ur/lifestyle/safe-and-hygenic-usage-of-sanitary-pads Mon, 14 May 2018 11:12:55 +0000 http://htv.com.pk/ur/?p=20869 safe and hygenic usage of sanitary pads

بارہ سال کی بچی ہو یا ۳۵ سال کی عورت ،ماہواری کے دوران صفائی اور صحت کے اصول اپنانا بہت ضروری ہے

The post سینٹری پیڈز کا استعمال اور احتیاط appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
safe and hygenic usage of sanitary pads

بارہ سال کی بچی ہو یا ۳۵ سال کی عورت ،ماہواری کے دوران صفائی اور صحت کے اصول اپنانا بہت ضروری ہے ،وہ عورت جو گاؤں ،دیہات میں رہتی ہو یا شہر میں ہو رہتی ہو ماہواری کے دوران نیپکن کے استعمال کے معاملے میں بہت حساس ہوتی ہے لہذا پیڈز کے استعمال کے صیح طریقے اور چند احتیاطی تدابیر ضرور ذہن میں رکھیں ۔
۱۔ماہواری کے وہ خاص دن جن میں بہاؤ تیز ہو ان دنوں میں خاص کمرشل پیڈز ( ونگس والے پیڈز ، اوور نائٹ پیڈز ) استعمال کریں اور باقی کے دوسرے دن دوسرا برینڈ استعمال کر سکتی ہیں ۔ مگر جلد ی جلدی نئے برینڈز استعمال کر کے خود کو غیراطمینان بخش صورت حال میں ہر گز نہ ڈالیں ۔
۲۔ پیڈز تبدیل کرنے کا ایک معیاری وقت ہر ۶ گھنٹہ بعد ہے ،وہ خواتین جن کا بہاؤ تیز ہو انھیں ہر تین گھنٹہ بعد پیڈ تبدیل کرنا چاہئے ۔
۳۔ ماہواری کے دوران صفائی نہ ہونے کی وجہ سے اور گندگی دیر تک لگے رہنے کی وجہ سے ایک خاص بو پیدا ہونے لگتی ہے لہذا پیڈ تبدیل کرنے سے پہلے نیم گرم پانی سے جسم کو اچھی طرح دھو کر خشک کر لیں ۔ اگر جسم کو دھونا ممکن نہ ہو تو حسا س جگہوں کو اچھی طرح صاف کپڑے سے پونچھ لینا چاہئے ۔
۴۔ ایک تاثر یہ بھی پایا جاتا ہے کہ ماہواری کے دوران غسل نہیں کرنا چاہئے ،ااکثر خواتین نارمل ڈلیوری کے بعد پیشاب کی نالی کے انفیکشن میں مبتلا ہو جاتی ہیں اس کی وجہ صفائی کا خیال نہ رکھنا اور چھ سات دن تک غسل نہ کرنا ہے ۔ ۔،اگر ماہواری کے دوران صحت اور صفائی کا بھر پور بندوبست ہو تو غسل کی واقعی ضرورت نہیں رہتی البتہ نیم گرم پانی میں نمک ملا کر جسم پر بہانے سے ٹانگوں کی اینٹھن اور پٹھوں کا کھنچاؤ کم کیا جا سکتا ہے ۔ لیکن ماہواری کے دوران غسل کے بعد جسم کو خشک کرنا نہایت ضروری عمل ہے ۔
۵۔ خوشبو دار پیڈز استعمال کرنے سے گریز کریں کیوں کہ اس پر موجود کیمیکل جلد کی حساسیت میں اضافہ کر دیتے ہیں ایسے نیپکن استعمال کریں جس میں خوشبوکم اور روئی کہ نرم تہہ موجود ہو تاکہ جسم کے چھلنے کا امکان کم رہے ۔
۶۔ ماؤں کی ذمہ داری ہے کہ بچیوں کو سخت تاکید کریں کہ وہ ایک پیڈ کے اوپر دوسرا پیڈ ہر گز استعمال نہ کریں ۔
۷۔ ماہواری کے دوران چھوٹے سائز کا ( فٹننگ والا ) انڈر گارمنٹ استعمال کریں تاکہ پیڈ ایک جگہ پر رہے ۔
۸۔ زیادہ تر ڈاکٹر آرگینک پیڈ استعمال کرنے کی تجویز دیتے ہیں اس لئے اگر بہاؤ زیادہ نہ ہو تو کمرشل پیڈز استعمال کرنے سے گریز کریں ، روزانہ ونگس والے پیڈ استعمال کرنے سے جلد چھل سکتی ہے ر اس کی جگہ گھر میں دستیاب صاف کپڑوں یا تولیوں کے ٹکڑوں کو استعمال کریں ۔ گھر کے پیڈز استعمال کرنے میں کوئی حرج نہیں لیکن اگر وہ گندے ہوں تو انفیکشن ہو سکتا ہے اس لئے گھر کے پیڈز استعمال کرنے سے پہلے انھیں اینٹی سیپٹک محلول سے دھو لیں ۔
۹۔ جب ماہواری کی تاریخ نزدیک آنے لگے تو اپنے بیگ میں چند چیزیں ضرور رکھیں ( ایک سے زائدپیڈ ۔،ٹشو پیپر ،وائپس ، صاف تولیہ ،پانی کی بوتل ، اور ہینڈ سینیٹائزر )
۱۰۔ ماہواری کے دوران جسم کے مخصوص حصوں کو صابن یا اینٹی بیکٹیریل محلول سے صاف کرنے سے گریز کریں ،صرف نیم گرم پانی سے ہی جسم کو صاف کریں اس بات کا خیال رکھیں کہ پانی بہانے کے بعد ہاتھ الٹی سمت میں نہ جائے ،اوپر سے نیچے کی طرف ہی ہاتھوں کی سمت ہونی چاہئے ۔
۱۱۔ پیڈز کو ضائع کرنے کے لئے واش روم میں ٹوائلٹ پیپر اور چھوٹی تھیلیاں رکھیں تاکہ پیڈزاستعمال کرنے کے بعد تھیلی یا پیپر میں لپیٹ کر ضائع کئے جا سکیں ۔
۱۲، پیڈ وقت پر تبدیل نہ کئے جائیں تو انڈر گارمنٹ کے کناروں پر ناپاکی لگی رہے جاتی ہے جو جسم پر خراش یا ریش کر سکتی ہے ۔اگر ریش ہونے کی صورت میں زیتون کا تیل ،یا چکنا مرہم فوری طور پر لگا لیا جائے تو انفیکشن سے بچاجا سکتا ہے ۔
۱۳۔ اگر پیڈ استعمال کرتے وقت واش روم میں گر جائے یا گیلا ہو جائے تو اسے استعمال نہیں کرنا چاہئے
۱۴۔ گرمیوں میں ہر روز انڈر گارمنٹ تبدیل کرنے کی کوشش کرنی چاہئے تاکہ پسینہ زیادہ دیر تک لگا نہ رہے ۔
۱۵۔ پیڈ تبدیل کرنے کے بعد تو ہاتھ دھونا ضروری ہے لیکن پیڈ تبدیل کرتے وقت بھی ہاتھ ضرور دھو لیں ۔


The post سینٹری پیڈز کا استعمال اور احتیاط appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
باہر کا کھانا ، جیب پر بھاری https://htv.com.pk/ur/lifestyle/hoteling-ka-bartha-rujhaan Mon, 15 Jan 2018 08:29:25 +0000 http://htv.com.pk/ur/?p=25067 hoteling kay nuqsaanat

بلاشبہ باہرکاکھاناصحت کے لئے کتناہی کیوں نہ خطرناک ہو مگرذائقہ کے اعتبارسے لذت سے بھرپورہوتاہے۔یہی وجہ ہے کہ لوگ سب کچھ جانتے بوجھتے بھی باہرکاکھاناکھانے پرمجبورہوتے ہیں۔کھانے کایہ چسکاان کی صحت پرکاری ضرب تو لگاتاہی ہے لیکن ساتھ ہی ساتھ جیب بھی خالی کرجاتاہے۔ایک ہی وقت میں ہزاروں روپے کابل اداکرکے جب لوگ واپس لوٹتے […]

The post باہر کا کھانا ، جیب پر بھاری appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
hoteling kay nuqsaanat

بلاشبہ باہرکاکھاناصحت کے لئے کتناہی کیوں نہ خطرناک ہو مگرذائقہ کے اعتبارسے لذت سے بھرپورہوتاہے۔یہی وجہ ہے کہ لوگ سب کچھ جانتے بوجھتے بھی باہرکاکھاناکھانے پرمجبورہوتے ہیں۔کھانے کایہ چسکاان کی صحت پرکاری ضرب تو لگاتاہی ہے لیکن ساتھ ہی ساتھ جیب بھی خالی کرجاتاہے۔ایک ہی وقت میں ہزاروں روپے کابل اداکرکے جب لوگ واپس لوٹتے ہیں توان میںسے اکثریہی سوچتے ہیں کہ خرچہ زیادہ ہوگیا ہے اور اندازے سے زیادہ بجٹ لگ گیا اس سے اچھا تھا کہ گھر میں کچھ انتظام کرلیتے ۔
باہرجاکرکھاناکھانےمیں مزہ تو بہت آتاہے لیکن اس شوق کوپوراکرنے کے لئے بڑی قربانیاں دینا پڑتی ہیں۔مالی طورپراس کے بہت سے نقصانات ہوتے ہیں جواس وقت نظرانداز ہوجاتے ہیں لیکن بعد میں یہ مسائل شدت اختیارکرجاتے ہیں۔اس سے گھریلوماحول تو خراب ہوتاہی ہے ساتھ ہی انسان کی ساکھ بھی بری طرح متاثرہوتی ہے۔باہرکھاناکھانے کاشوق ضرورپوراکریں لیکن تب جب آپ اپنی اوراپنے گھروالوں کی تمام ضروریات پوری کرچکے ہوں۔

مزید جانئے :کیا ہوٹلنگ اور ڈائٹنگ ایک ساتھ ممکن ہے؟


بجٹ آؤٹ کی شکایت

باہرجاکرکھاناکھانایقینا سب ہی کوپسند ہوتاہے۔لیکن اس سے ہونے والاسب سے بڑامسئلہ یہی ہوتاہے کہ ماہانہ بجٹ آؤٹ ہوجاتاہے۔ جس کے باعث خاتون خانہ اورگھرکے سربراہ کے لئے گھرکاگزارہ کافی مشکل مرحلے میں داخل ہوجاتاہے۔بہت سی ضروری اشیاء کی عدم دستیابی کے باعث گھرمیں پریشانیاں ڈیرے ڈال لیتی ہیں۔ چند لقموں کی لذت آپ کے پورے مہینے کوڈسٹرب کردیتی ہے۔اوراگرآپ کسی خاص موقع پرباہرکھاناکھانے جاتے ہیں تو گھروالے آنے والے اہم مواقعوں کے لئے بھی امیدلگالیتے ہیں جوبجٹ آؤٹ ہونے کی وجہ سے پوری نہ ہونے کے باعث مایوسی کاسامناکرناپڑتاہے۔

مزید جانئے :کھانا کھانے کے بعدیہ 8کام نہ کریں


بچت صرف ایک خواب

ماہانہ آمدنی سے ہرکوئی بچت کاخواہاں ہوتاہے جوکسی بھی ایمرجنسی کی صورت میں کام آتی ہےاوریہ بچت اپنے خاندان اور دوستوں کے ساتھ باہرکھاناکھانے کے باعث صرف ایک خواب ہی رہ جاتی ہے۔ہرطبقہ کے لئے ماہانہ بچت انتہائی ضروری ہے کیونکہ یہ بچت نہ صرف ان کے بلکہ ان کے بچوں کے چھوٹے موٹے خواب پورے کرنے کے بھی کام آتی ہے۔موجودہ دورمیں جہاں بچوں کی پڑھائی انتہائی اہم مسئلہ بن چکی ہے تو تمام والدین کے لئے ہر گزرتا مہینہ اپنے ساتھ کوئی بڑاخرچہ لے کرآتاہے جوان کی سالانہ بچت سے ہی پوراہوتاہے۔بچو ں کی پڑھائی اوران کی شادی یہ دواہم معاملات ہیں جن کے لئے ہرگھرمیں بچت لازمی کی جاتی ہے۔

مزید جانئے :زیادہ کھانا کھانے کے نقصانات


مہینے کے آخرمیں تنگی

مہینے کے آخرمیں تنگی ہوناایک عام سی بات ہے۔تمام ہی گھروں میں یہ مسئلہ اہم سمجھاجاتاہے یہاں تک کہ تنخواہ آنے سے قبل کے دن کاٹناانتہائی مشکل ہوجاتاہے۔لیکن اگرگھرمیں باقاعدہ منصوبہ بندی سے چلاجائے تو اس مشکل سے بچاجاسکتاہے۔باہرکھاناکھانے کی عادت کی کسی بھی طرح حمایت نہیں کی جاسکتی ہے۔یہ عادت نہ صرف آپ کے اورآپ کے بچوں کی صحت کوتباہ وبرباد کرسکتی ہے بلکہ آپ کواَن دیکھی پریشانیوں میں بھی مبتلاکرسکتی ہے۔مہمانوں کی آمدپرمہمان نوازی ہو یاکوئی اوراہم ضرورت ایسی خواہشات کی وجہ سے پوری نہیں ہوپاتی۔جب جیب ہی خالی ہوتوضرورت مجبوری میں تبدیل ہوجاتی ہے۔

مزید جانئے:دیر رات کھانا کھانے کے نقصانات


ایمرجنسی میں پریشانی

کسی بھی انسان کوکسی بھی وقت کوئی بھی ایمرجنسی ہوسکتی ہے۔بوقت ضرورت اگرپیسوں کی قلت ہوتویہ لمحہ آپ کے لئے لمحہ فکریہ بن جاتاہے۔اگرآپ اپنی آمدنی سے پیسے بچانے کے خواہش مند ہیں تو باہرکھاناکھانے جیسی فضولیات سے پرہیز کریں۔باہرکھاناکھانے کے شوقین افراد نئی جگہ کاکھاناکھانے کے لئے پیسے جمع کرتے ہیں اوریہی کھانا انھیں مزید خرچے کی طرف متوجہ کرتاہے۔اس طرح کے خرچو ں کے باعث ان کی جیب پراضافی بوجھ پڑتاہے جوآگے جاکران کے لئے مالی مسائل کاسبب بنتاہے۔باہرجاکرہزاروں کاکھاناکھانے سے بہترہے کہ ان پیسو ں کوسنبھال کررکھاجائے تاکہ وقت پرانھیں بہترطریقے سے استعمال کیاجاسکے۔

مزید جانئے :قدرتی جراثیم کش محلول کو گھر میں بنائیں


مقابلے کی دوڑ

آج ہم میں سے تقریباًہردوسرا مقابلہ کی دوڑ میں شامل ہے اگرکوئی کسی مہنگے ریسٹورینٹ یاہوٹل میں کھاناکھانے گیاہے تو دوسروں کے لئے بھی لازم ہے کہ یاتو اسی میں یاپھراس سے بھی مہنگے ریسٹورنٹ کارخ کرے۔باہرجانا،گھومناپھرناکسے پسندنہیں ہوتالیکن چادردیکھ کرپاؤں پھیلانے کامحاورہ بھی یادرکھناچاہئے۔اگرآپ باہرکھاناکھانے کے شوقین ہیں توکم ازکم اس بات کاضرورخیال رکھیں کہ اس شوق سے کہیں آپ کسی پریشانی میں تو مبتلانہیں ہوجائیں گے۔ضروری ہے کہ پہلے اپنی تمام ضروریات پوری کرلی جائیں اور پھرباہرکھاناکھانے کاپروگرام ترتیب دیاجائے۔یادرکھیں باہرکاکھانانہ صرف صحت کی بربادی بلکہ صاف اورسیدھا مالی خسارہ کاراستہ ہے۔

مزید جانئے :گھر میں موجود 11 چیزیں جو آپ کو بیمار کرسکتی ہیں 


The post باہر کا کھانا ، جیب پر بھاری appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
کراچی :کولڈرنک پینے والے ہو جائیں ہوشیار۔وڈیو https://htv.com.pk/ur/news/jaali-cold-drink Wed, 20 Dec 2017 15:31:37 +0000 http://htv.com.pk/ur/?p=24492 cold drink

ملاوٹ اور غیر معیاری اشیاء کی فرخت ایک ایسا ناسور ہے جو ہمارے معاشرے میں وبا ء کی طرح پھیل چکا ہے۔ کھانے والی اشیاء میں ملاوٹ قیمتی انسانی جانوں سے کھیلنے کے مترادف ہے۔ ایسے منفی عناصر اپنے تھوڑے سے نفع کے لیے ہماری نسلوں کو تباہ کرنے پر تلے ہوئے ہیں اگر معاشرے […]

The post کراچی :کولڈرنک پینے والے ہو جائیں ہوشیار۔وڈیو appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
cold drink

ملاوٹ اور غیر معیاری اشیاء کی فرخت ایک ایسا ناسور ہے جو ہمارے معاشرے میں وبا ء کی طرح پھیل چکا ہے۔ کھانے والی اشیاء میں ملاوٹ قیمتی انسانی جانوں سے کھیلنے کے مترادف ہے۔

ایسے منفی عناصر اپنے تھوڑے سے نفع کے لیے ہماری نسلوں کو تباہ کرنے پر تلے ہوئے ہیں اگر معاشرے کو صحت مند بنانا ہے تو اِن کے خلاف مؤثر کارروائی کرنا ہو گی۔

HTV کی ٹیم جیسے ہی وہاں پہنچی تو وہاں غیر معیاری اور حفظانِ صحت کے اصولوں کے مترادف ہر مشہور برانڈ کی مشروبات کی خالی بوتل موجودتھی ۔

HTV کی ٹیم نے ملک کے سب سے بڑے شہر کراچی میں ملاوٹ کرنے اور غیر معیاری اشیاء فروخت کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن شروع کیا ہے HTV کی ٹیم نے کراچی کے مختلف مقامات پر چھاپے مارے۔ اِس ناجائز دھندے میں ملوث افراد کو بے نقاب کیا ۔اس مہم کے تحت ہم کراچی کے مشہور علاقے North Karachi میں موجود غیر معیاری کولڈڈرنک (cold drink)تیار کرنے والی فیکٹری میں چھاپہ مارا ۔۔۔

مزید جانئے: ٹماٹو کیچپ میں سب کچھ ہے سوائے ٹماٹر کے

جہاں معروف برانڈ ز کی بوتلوں میں جعلی اور مضر صحت سوڈا واٹربنائے جارہے تھے ۔
HTV : (HTV Stands for – Health. Taste and Vitality) کی ٹیم جیسے ہی وہاں پہنچی تو وہاں غیر معیاری اور حفظانِ صحت کے اصولوں کے مترادف ہر مشہور برانڈ کی مشروبات کی خالی بوتل موجودتھی ۔ جس میں جعلی مصالحہ جات کے ذریعے فیکٹری میں ناقص، غیرمعیاری اور ملاوٹ شدہ کولڈڈرنک بنائی جارہی تھی ۔فیکٹری میں گندگی اور غلاظت کی موجودگی ہر جانب تھی ۔
خوراک کے نام پر مضر صحت اور غیر معیاری اشیاء فروخت کرنے والوں کے خلاف کوئی رعایت نہیں برتی جانی چاہیے حکومت کو چاہیئے کہ ان لوگوں کے خلاف آہنی ہاتھوں سے نمٹا جائے اور اس مکروہ دھندے میں ملوث ملزمان اور ان کے سہولت کاروں کو کیفر کردار تک پہنچایا جائے ۔

The post کراچی :کولڈرنک پینے والے ہو جائیں ہوشیار۔وڈیو appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>