رمضان ڈائٹ پلان فٹ رہنا بنائے بے حد آسان

3,306

رمضان کے بابرکت مہینے کی آمد آمد ہے۔ روزہ صبح صادق سے غروب آفتاب تک ہوتا ہے۔ غروب آفتاب کے وقت روزہ افطار کیا جاتا ہے۔ اس وقت گھر کے تمام افراد ایک جگہ جمع ہوتے ہیں۔ اور روزہ افطارتے ہیں۔ روزہ رکھنے سے تھوڑی کمزوری محسوس ہوتی ہے۔ لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ اسی سے وزن کم ہورہا ہے۔ یہاں ہم آپ کو رمضان میں صحت مند غذا لینے اور چٹ پٹی اور مضر صحت چیزوں سے پرہیز کے کچھ طریقے بتائیں گے۔

رمضان کی برکتیں:

اسلامک کلینڈر کے لحاظ سے رمضان نواں مہینہ ہے جس میں روزے رکھے جاتے ہیں۔ جس کے ساتھ ہی اس مہینے میں عبادات اور اچھے اعمال کے ذریعے خود کو گناہوں سے پاک کرنے کا ایک اچھا موقع ہمیں دیا گیا ہے جس میں ہر نیک عمل کرنے کا ثواب دوسرے مہینوں سے کئی گناہ زیادہ ہے۔

کھجور سے روزہ افطار کرنا:

تین کھجور، جوس یا پانی سے روزہ افطار کرنے میں بھی بڑی حکمت ہے۔ کیونکہ اس وقت جسم کو فوری طور پر توانائی کی ضرورت ہوتی ہے۔ جو گلوکوذ کی شکل میں دماغ اور نروز کو چست بناتی ہے۔ کھجور گلوکوذ کی کم ہوتی مقدار دوبارہ بحال کرتی ہے۔ جبکہ پانی یا جوس جسم میں ہونے والی پانی کی کمی کو دور کرنے کے ساتھ معدنیات کو بھی پورا کرتا ہے۔ اس طرح جب پیٹ میں سب سے پہلے کھجور جاتی ہے تو وہ اس کی توانائی کی ضرورت کو پورا کرتی ہے۔
کھجور نظام ہضم کو چلانے میں مددگار ہوتی ہے جبکہ پانی روحانی اور جسمانی تازگی فراہم کرتا ہے۔ یہ پیاس کو بجھا کر معدے کو سکون بخشتا ہے۔اس لیے کھجور کو لازمی اپنے ڈائٹ پلان کا حصہ بنائیں۔


مزید جانئے  : رمضان میں پانی کی کمی کو کیسے پورا کریں ؟

اچھی غذا کھائیں:

رمضان میں غذا کا انتخاب کرتے ہوئے یہ بات ہرگز نہ بھولیں کہ سحری اور افطار کا یہ کھانا آپ کے دن بھر کے روزے کو تقویت دے گا۔ اس لیے ڈائٹ پلان میں صحیح غذا لینا ہی اہم ہے۔ کیونکہ افطار کے وقت ہی کھوئی ہوئی توانائی بحال ہوتی ہے۔ اس لیے اس وقت ایسی غذا کا انتخاب کیا جائے جو ہماری تمام جسمانی ضروریات کو پورا کرسکے۔ یہاں ایسی غذائیں تحریر کی جا رہی ہیں جن میں سے کچھ کا انتخاب کرکے آپ بہتر توانائی حاصل کر سکتے ہیں۔

گوشت ؍پھلیوں کا گروپ:

ڈائٹ پلان میں گوشت کے گروپ میں مرغی، بکری، مچھلی کا گوشت استعمال کریں۔ ان میں سے ایک یا دو چیزیں لے سکتے ہیں۔ مٹر ، چنے، دال، پھلیاں وغیرہ۔ کوئی ایک چیز لی جا سکتی ہے۔ یہ تمام چیزیں پروٹین ، معدنیات، وٹامن اور ہاضم فائبر سے بھرپور ہیں۔

روٹی ؍اناج کا گروپ:

گیہوں کی روٹی یا چپاتی ، پراٹھے ، چاول (براؤن رائس)۔ اس گروپ کی ایک یا دو چیزیں آپ کو اچھی مقدار میں کاربوہائیڈریٹ فائبر اور توانائی فراہم کریں گی۔

دودھ کا گروپ:

دودھ، دہی، مکھن ، پنیر میں سے ایک یا دو چیزیں کلشئم کے ساتھ پروٹین بھی فراہم کرتے ہیں جو جسم اور ہڈیوں کی طاقت کو برقرار رکھتے ہیں۔

اپنے ڈائٹ پلان کو مزید صحت مند بنانے کے لیے تیل کی مقدار کم کریں۔ اس کے لیے پکانے کے دوسرے طریقے بھی اپنائے جا سکتے ہیں۔ جیسے اسٹیمنگ، گریلنگ، بیکنگ یا کم تیل میں تلنا ۔ ایسے تیل کا انتخاب کریں جس میں فیٹس کم ہوں جیسے کنولا آئل ، سویا بین آئل وغیرہ۔

اس رمضان میں اچھی غذا کی عادت بنائیں۔ اس طرح جب رمضان کا مہینہ ختم ہوگا تو آپ خود کو صحت مند محسوس کریں .گے


اس بارے میں جانئے :رمضان میں صحت کو یقینی بنانے کے لئے چھ ضروری اقدامات


شاید آپ یہ بھی پسند کریں
تبصرے
Loading...