رمضان میں پانی کی کمی کو کیسے پورا کریں ؟

2,406

پانی کی کمی کی سب سے عام علامت پیاس کااحساس ہے۔اگرآپ کوپانی یادیگرمشروبات پینے کی خواہش محسوس ہوتی ہے تواس کامطلب ہے کہ آپ پہلے سے پانی کی کمی کاشکار ہیں۔ظاہرہے کہ رمضان میں روزہ کے دوران گرمی کے لمبے اورشدید گرم دن میں خود کوہائیڈریٹ رکھناآسان نہیں ہے۔
خاص طورپراگرآپ رمضان کے دن پاکستان میں گزارتے ہیں توگرمی کی شدید لہر کی وجہ سے مسلسل پیاس کے خلا ف لڑائی کسی جنگ سے کم نہیں ہوتی ہے۔پانی کی کمی سے بچنے کے لئے سحر اورافطارمیں بہت ساپانی اوردیگرسیال کااستعمال واحد راستہ ہے۔
ذیل میں دی گئی ٹپس پرعمل کرنے سے اس گرم موسم میںآپ کی پانی کی ضرورت تو کم نہیں ہوگی لیکن اتناضرورہے کہ ان کے استعمال سے دن بھرآپ کوپانی کی کمی نہیں ہوگی۔کوشش کریں کہ رمضان کے دوران سحری اورافطاری میں ان عادات کواپنامعمول بنائیں تاکہ آپ دن بھر ہائیڈریٹ رہ سکیں۔

پانی زیادہ پئیں

یہ سب سے اہم اورواضح بات ہے۔ظاہرہے کہ سحری کے دوران ساراپانی نہیں پیاجاسکتاہے۔کیونکہ یہ عمل آپ کوپانی کی کمی سے بچانے کے بجائے آپ کوبھاری پن کااحساس دلاتاہے۔روزہ میں پانی کی کمی سے بچنے کے لئے رات سے وقفے وقفے سے پانی پیناشروع کردیں۔

موسم کوذہن میں رکھتے ہوئے ہرگھنٹے بعد ایک سے دوگلاس پانی پیئے۔فزی ڈرنک،کولامشروبات اوراشتہاری پھلوں کے جوس سے گریز کریں۔ ان میں موجود چینی کی اعلیٰ مقدار آپ کوصرف پیاس کااحساس دلائے گی۔دن میں کم از کم تین لیٹرپانی کااستعمال یقینی بنائیں۔ روزہ کے دوران ہونے والی کمی کوباقی گھنٹوں میں کھاپی کرپوراکریں۔


مزید جانئے  : رمضان میں جلد کی رونق بڑھانے والی غذائیں

 

درست کپڑوں کاانتخاب کریں

جسم کے درجہ حرارت کوکم اوراضافی پسینہ سے بچنے کے لئے یہ بہترین خیال ہے۔اس موسم میں صحیح کپڑو ں کاانتخا ب کرنے کی اشد ضرورت ہوتی ہے۔کپڑوں کے انتخاب میں رنگ،فیبرک اورتہوں کاخیال رکھیں۔موٹے اورایک سے زیادہ تہہ والے کپڑوں سے گریز کریں اوررنگوں کے انتخاب میں احتیاط ضروربرتیں۔

اس سے یہ زیادہ گرمی جذب نہیں کریں گے۔کالے رنگ اورتنگ لباس زیب تن نہ کریں۔لباس میں کسی ایسی چیز کاانتخاب نہ کریں جوآپ کے جسم میں گرمی کوجذب کرنے کاباعث بنے ۔ڈھیلے ڈھالے لباس پہنیں تاکہ آپ کی جلد سانس لے سکے اورپسینہ خشک ہوسکے۔

ٹھنڈے پانی سے نہائیں

رمضان کے اصولوں کے مطابق روزہ کے دوران ایک سے زیادہ بارنہانے میں کوئی حرج نہیں ہے۔رمضان کے گرم دنوں میں خود کو ٹھنڈارکھنے کایہ بہترین طریقہ ہے۔اس سے آپ خود کو ری ہائیڈریٹ اورتازہ دم محسوس کریں گے۔

اگرآپ کے جسم کادرجہ حرارت بہت زیادہ ہے یاآپ دھوپ سے آئیں ہیں توفوری طورپرنہانے سے گریز کریں۔دھوپ سے آنے کے بعد پہلے تھوڑی دیرآرام سے بیٹھ جائیں تاکہ آپ کے جسم کادرجہ حرارت نارمل ہوجائے۔جب درجہ حرارت نارمل محسوس ہو توپھرنہالیں۔جسم کے درجہ حرارت میں اچانک تبدیلی سے دل کے دورہ کاخطرہ بڑھ جاتاہے۔اسی لئے اس طرز عمل سے بچنے کی کوشش کریں۔

ہلکی غذالیں

اگرآپ افطارمیں صحیح غذاکاانتخاب کریں تو اس سے بھی آپ کوہائیڈریٹ رہنے میں مدد مل سکتی ہے۔بہت زیادہ میٹھی اورتلی ہوئی غذائیں کھانے سے آپ کے جسم میں پانی کی کمی ہوسکتی ہے۔ایسی غذاؤں کاانتخاب کریںجن میں پانی وافرمقدارمیں موجودہوتاہے۔

مثال کے طورپرمالٹااورتربوز افطارکے لئے بہترین انتخا ب ہیں۔ اس میں موجود اضافی پانی آپ کوہائیڈریٹ رکھتا ہے۔دیگرموثرذرائع میں ہری سبزیوں سے تیارکردہ سلاد بہترین ہے۔یہ کھانے نہ صرف آپ کے پیٹ کے لئے ہلکے ہوتے ہیں بلکہ آپ کے جسم میں پانی کی سطح کوبھی برقراررکھتے ہیں۔

پانی کی کمی کی علامات

رمضان میں روزہ کے دوران پیاس کااحساس ایک حقیقت ہے۔اگرآپ میں پانی کی کمی ہوتی ہے تودیگرعلامات پرغورکریں جیسے سرخ جلد،پھٹے خشک ہونٹ،جسم کے درجہ حرارت میں اضافہ،تھکاوٹ،سرچکرانا،کمزوری اورسانس لینے میں دشواری کاسامناوغیرہ۔

انگریزی میں پڑھئے 

تحریر : ماہا آفریدی 

ترجمہ : سائرہ شاہد


شاید آپ یہ بھی پسند کریں
تبصرے
Loading...