گنے کے استعمال کے 8طبی فوائد

2,757

گنا دنیا کی سب سے زیادہ اگائی جانے والی فصل ہے اور جن ممالک میں اس کی کاشت زیادہ کی جاتی ہے ،ان میں پاکستان بھی شامل ہے ۔ ھمارے ملک میں گنے کی کاشت جنوری اور فروری میں ہوتی ہے ۔ اس کے پودے کی اونچائی اچھے سے بارہ فت تک اور تقریبا ہر آدھا فٹ پر گانٹھے بنی ہوتی ہیں ، جب کے فصل کی تیاری میں پورا سال لگ جاتا ہے ۔ تحقیق کے مطابق گنے اور اس کے رس کے بے شمار فوائد ہیں ۔ جن میں سے چند مندرجہ ذیل ہیں ۔

1۔گنے کے رس میں پروٹین ، کاربوئیڈیٹ ، کیلشم ، فاسفورس کی وافر مقدار شامل ہوتی ہے جو کہ انسانی جسم کو اندرونی طور پر مضبوط بناتی ہیں ۔

2۔ گنے کا رس دل کے امراض سے محفوظ رکھتا ہے اور کولیسٹرول کی سطح بڑھنے نہیں دیتا ، جب کے گردوں اور جگر کے لئے بھی فائدہ مند ہے ۔

3۔گنا قدرتی طور پر جگر اور گردے کی صفائی کرکے ان کے افعال کی استعداد بڑھادیتا ہے ۔

4۔ گنے کے رس کے استعمال سے پیشاب کی بندش اور جلن ختم ہوجاتی ہے ۔۔

5۔شہد میں گنے کا رس ملا کر پینے سے قے رک جاتی ہے اور انار کے ساتھ ملا کر پینے سے خونی دست رک جاتے ہیں ۔

6۔گنے میں کیلیوریز کی زائد مقدار پائی جاتی ہے جو توانائی میں اضافہ کا موجب بنتی ہے ۔

7۔گڑ بھی گنے سے بنتا ہے جو کے پیٹ کو صاف رکھنے ، بلغم ، کھانسی دمے اور سینے کے درد میں بھی فائدے مند ہوتا ہے ۔

8۔ وہ بچے جن کی ہڈیاں کم زور ہے ، یا ں پھر دانتوں کے نقائص کا شکار ہیں ان کے لئے بھی گڑ کا استعمال نہایت فائدے مند ہے ۔

loading...
تبصرے
Loading...