اویولیشن اور فرٹائلیٹی حمل میں مددگار

اویولیشن اور فرٹائلیٹی کس طرح حمل میں مددگار رہتے ہیں اور اس سلسلہ میں کن کن چیزوں کو مدنظر رکھنا چاہیے اور کن چیزوں سے احتیاط ضروری ہے ، جانئے!

آپ کی ماہانہ سائیکل:

حاملہ ہونے کے لیے اپنی ماہانہ سائیکل کے بارے میں جاننا بہت ضروری ہے۔ اس کا آغاز بلیڈنگ کے پہلے دن سے ہوتا ہے۔ آپ کا جسم ہارمونز خارج کرتا ہےجو اووری میں ایگز کی نشوو نما کرتے ہیں۔ دوسرے سے ۱۴ ویں دن کے درمیان یہ ہارمونز یوٹرس کی لائننگ کو موٹا کر کے فرٹیلائز ایگ کے لیے تیار کرتے ہیں ۔ یہ فولیکیولر اسٹیج کہلاتی ہے۔

اوویولیشن میں کیا ہوتا ہے:

ایک ماہواریسے دوسری ماہواری کا درمیانی وقفہ ۲۸ سے ۳۵ دن تک ہوتا ہے۔ اس میں ۱۱ ویں دن سے ۲۱ویں دن کے دوران اوویولیشن (ovulation)ہوتی ہے جس میں ہارمونز سب سے تیار ایگ کو خارج کرنے میں مدد دیتے ہیں ساتھ ہی رحم میں موجود لعاب زیادہ لیس دار ہوجاتا ہے تاکہ اسپرم ایگ تک بہ آسانی جاسکے۔

مزید جانئے :دوران حمل صحت کے مسائل اور ان کا حل

صحیح وقت کا خیال رکھیں:

ایک عورت میں ۱ سے ۲ملین ایگز ہوتے ہیں جن میں سے وہ اپنی پوری زندگی میں ۳۰۰ سے ۴۰۰ خارج کرتی ہے۔ یعنی عام طور پر ہر ماہ میں ایک دفعہ یہ ایگ اووری سے فیلوپین ٹیوب کے ذریعے یوٹرس میں جاتا ہے۔ اگر صحیح وقت ہو تو اسپرم یوٹرس میں داخل ہوتے ہوئے ایگ کے ساتھ مل جائے گا۔ اگر ایگ کے اووری سے نکلنے کے بعد میں فرٹیلائزیشن کا عمل نہ ہو تو یہ ایگ ختم ہوجاتا ہے جبکہ ٍاسپرم ۳ سے ۵ دن تک رہ سکتا ہے۔ اس لیے اگر آپ کو اپنی اوویولیشن کا وقت پتہ ہو تو ان دنوں میں فرٹیلایزیشن کا عمل آپ اور آپ کے ساتھی کے لیے مفید ثابت ہوگا۔

فرٹیلائزیشن کے لیے سب سے خاص دن:

حمل ٹہرنے کاسب سے زیادہ امکان اوویولیشن سے ۱ سے ۲ دن پہلے ہوتا ہے اگر آپ کو ہمیشہ ۲۸ دن بعد ہی ماہواری آتی ہے تو اپنی اگلی ماہواری سے ۱۴دن پہلے گن کر حساب لگائیں پھر ان دنوں میں ہر ایک دن چھوڑ کرمیلاپ کا پلان بنائیں یاد رکھیں روزانہ میلاپ سے مرد کے اسپرم کی تعداد میں کمی ہوسکتی ہے۔

مزید جانئے :حمل،ڈھکے چپھے مسائل کے لیے آسان ٹوٹکے

اویولیشن کا جسم کے درجہ حرارت سے اندازہ لگائیں:

جسم میں ایگ خارج ہونے کے بعد ہارمونز یوٹرس کی لائننگ بنانا شروع کردیتے ہیں ۔ اس سے آپ کے جسم کا درجہ حرارت تھوڑا بڑھ جاتا ہے۔ اس لیے صبح بستر سے اٹھنے سے پہلے تھرمامیٹر سے اپنا درجہ حرارت چیک کریں اس طرح آپ کو جسم میں اویولیشن ہوجانے کا اندازہ ہوجائے گا۔

ماہانہ سائیکل کا آخری حصہ:

ماہانہ سائیکل کے آخری حصے میں پروگیسٹر ون ہارمونز فرٹیلائزڈ ایگ کے لیے یوٹرس کو تیار کرتے ہیں۔ اگر ایگ فرٹیلایزڈ نہ ہو تو یہ ٹوٹ جاتا ہے۔ پروگیسٹرون لیول گر جاتا ہے اور ۱۴ سے ۱۶ دن بعد یہ ایگ خون اور یوٹرس کی لائننگ کے ٹشوز کے ساتھ خارج ہوجاتا ہے۔ ماہواری کا یہ عمل ۳ سے ۷ دن تک ہوتا ہے۔

مزید جانئے :حمل روکنے یا منصوبہ بندی کے بارے میں9اہم معلومات

موٹاپا حاملہ ہونے کی صلاحیت پر اثر انداز ہوتا ہے:

تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ اگر کسی خاتون کا وزن نارمل سے زیادہ ہے تو ایسی خواتین کو حاملہ ہونے کے لیے دگنا عرصہ درکارہوتا ہے لیکن وزن میں ۵ فیصد سے ۱۰ فیصد کمی اوویولیشن میں اضافہ کرتا ہے۔ مردوں میں بھی موٹاپابانجھ پن کا باعث بنتا ہے۔ اسی طرح وزن بہت زیادہ کم ہونا بھی بانجھ پن کی وجہ بن سکتا ہے۔

عمر کے اثرات:

عمر بڑھنے کے ساتھ خاص طور پر ۳۵ سال کی عمر کے بعد حمل ٹہرنے کے امکانات کم ہوتے جاتے ہیں۔ ماہرین کہتے ہیں کہ اگر آپ کی عمر ۳۵ سال سے کم ہے اور آپ حاملہ ہونے کے لیے ۱۲ ماہ سے کوشش کر رہی ہیں یا آپ کی عمر ۳۵ سال سے زیادہ ہے اور آپ حاملہ ہونے کے لیے ۶ ماہ سے زیادہ عرصے سے کوشش کر رہی ہیں اور کامیاب نہیں ہورہی ہیں تو اپنے ڈاکٹر سے رجوع کریں

مزیدجانئے :دوران حمل کیا کھانا چاہیے اور کیا نہیں؟

مردوں کی صلاحیت کو کیسے بڑھایا جائے:

   ۔ ذہنی دباؤں پر قابو پایا جائے۔

۔الکوحل یا تمباکو نوشی سے گریز کریں۔

۔ ایسی غذا کھائیں جس میں زنک وافر مقدار میں ہو جیسے گوشت ، ثابت اناج،سی فوڈاور انڈ ے وغیرہ اس کے علاوہ سیلینئم(گوشت، سی فوڈ ، مشروم ، سیریل)اور وٹامن ای۔
۔ زیادہ دیر تک گرم پانی سے نہ نہائیں یا گرم پانی کے ٹب میں نہ بیٹھیں اس طرح اسپرمز کی تعداد میں کمی ہوسکتی ہے۔

تبصرے
Loading...