cancer – ایچ ٹی وی اردو https://htv.com.pk/ur Fri, 21 Feb 2020 07:39:29 +0000 ur hourly 1 https://htv.com.pk/ur/wp-content/uploads/2017/10/cropped-logo-2-32x32.png cancer – ایچ ٹی وی اردو https://htv.com.pk/ur 32 32 چھاتی کے کینسر کی چارعلامات  https://htv.com.pk/ur/womens-health/breast-cancer-symptoms-2 Mon, 28 Oct 2019 11:01:01 +0000 https://htv.com.pk/ur/?p=34542 breast cancer

اکتوبر کا مہینہ چھاتی کے سرطان سے متعلق آگاہی کا مہینہ ہوتا ہے۔ اس ماہ میں بہت سے تنطیمیں اور این جی اوز اس انتہائی خطرناک بیماری سے متعلق آگاہی فراہم کرنے کی کاوشیں کرتی ہیں۔ یوں تو اس بیماری سے متعلق لوگوں اور بلخصوص خواتین میں آگاہی بڑھی ہے لیکن ابھی بھی خواتین کی […]

The post چھاتی کے کینسر کی چارعلامات  appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
breast cancer

اکتوبر کا مہینہ چھاتی کے سرطان سے متعلق آگاہی کا مہینہ ہوتا ہے۔ اس ماہ میں بہت سے تنطیمیں اور این جی اوز اس انتہائی خطرناک بیماری سے متعلق آگاہی فراہم کرنے کی کاوشیں کرتی ہیں۔ یوں تو اس بیماری سے متعلق لوگوں اور بلخصوص خواتین میں آگاہی بڑھی ہے لیکن ابھی بھی خواتین کی بڑی تعداد اس بیماری سے متعلق بہت کچھ نہیں جانتی ہیں۔

بریسٹ کینسر (چھاتی کا سرطان) خواتین میں بہت عام ہے۔ اس بیماری میں اضافے کے باعث اس کے علاج کیلئے ادویات اور طریقے دریافت کیے جا چکے ہیں جن کے باعث یہ مرض ابتدائی مرحلے میں ہی تشخیص ہو جاتا ہے اور اسے مزید بڑھنے سے روکا جا سکتا ہے۔ اس بیماری کے بارے میں جتنی آگاہی بڑھے گی اتنا ہی فائدہ مریض کی صحت کو ہوگا ،کیونکہ علامات اگر معلوم ہوگی تو فوری طور پر معالج سے رجوع کیا جائے گا اور ڈاکٹر اسکریننگ اور ٹیسٹ کے ذریعہ حقائق تک پہنچیں گے اور اگر ٹیسٹ نتائج مثبت بھی ہوئے تو اس کا علاج فوری شروع ہوسکتا ہے اور اس پر قابو پایا جاسکتا ہے۔

چھاتی کے سرطان کی چار بڑی علامات مندرجہ ذیل ہیں۔

پستان کی نوک میں درد

پستان کی نوک کا اندر کی جانب جھکاؤ یا مڑنا کینسر کے گھاؤ کی علامت ہو سکتا ہے۔ پستان یا اس کی نوک میں مسلسل اور غیر معمولی درد بھی چھاتی کے سرطان کی ایک علامت ہو سکتی ہے۔

سوجن کا ہونا

ضروری نہیں ہے آپ کو چھاتی پر کوئی گٹھلی بنتی محسوس ہو تو آپ ڈاکٹر سے رجوع کرنے کا سوچیں۔ چھاتی یا بغل میں سوجن بھی اس مرض کی پہلی علامات ہو سکتی ہیں اور انہیں طبی جانچ ہڑتال کی ضرورت ہوتی ہے۔ بنیادی طور پر چھاتی کے سائز، ساخت یا ایک پستان کی دوسرے پستان سے مختلف نظر آنے کی علامات کو بھی نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔

کمر درد

ایسا کام جو اکثر ہمیں بیٹھ کر گھنٹوں کرنا پڑے اس کے نتیجے میں اکثر ہم کمر درد کی شکایت کرتے ہیں۔ لیکن کمر درد (زیادہ تر کمر کے اوپر والے حصے کا درد) بھی چھاتی کے سرطان کی علامات میں سے ایک ہو سکتا ہے۔ چھاتی میں بڑھتی ہوئی رسولی (ٹیومر) پسلیوں اور ریڑھ کی ہڈی پر دباؤ کا باعث بنتی ہے جس کی وجہ سے مستقل کمر درد کی شکایت رہتی ہے۔ ادویات کے استعمال کے باوجود کمر میں مسلسل درد رہنا بھی اس مرض کی ایک علامت ہو سکتی ہے۔

مادے کااخراج

بچے کو دودھ پلاتے وقت پستانوں سے دودھ کے علاوہ کسی بھی اور مادے کا اخراج ہونا ایک ایسی علامت ہے جسے نظر انداز نہیں کیا جا سکتا۔ لازمی نہیں کہ یہ کینسر کی علامت ہو لیکن پھر بھی ڈاکٹر سے اس کا معائنہ کروانا ضروری ہے۔ہمیشہ یاد رکھیے کہ چاہے آپ کے خاندان میں کسی کو بھی چھاتی کا سرطان لاحق رہا ہو یا نہیں، 45 سال کی عمر کے بعد اپنے معالج سے وقتاً فوقتاً طبی معائنہ کروانا آپ کی صحت کیلئے از حد ضروری ہے۔


بریسٹ کینسر،اسباب،علامات اوراحتیاط


بریسٹ کینسر کی مختلف اسٹیجز اور علاج کی نوعیت


The post چھاتی کے کینسر کی چارعلامات  appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
زینٹک ٹیبلٹ ; کینسر کی مہلک بیماری کا باعث https://htv.com.pk/ur/news/zantac-tablet-is-dangerous Fri, 11 Oct 2019 06:18:35 +0000 https://htv.com.pk/ur/?p=34415 zantac

زینٹک ٹیبلیٹ کا استعمال بہت عام ہے اور معدہ سے جڑی اکثر بیماریوں کا علاج اس ٹیبلیٹ سے کیا جاتا ہے۔اس ٹیبلیٹ کا استعمال کئی سالوں سے دنیا بھر میں ہورہا ہے ۔ معدہ کے السر کے علاج کے لئے یہ دوا قلیل مدت تک استعمال کی جاتی ہے۔ یہ دوامعالج کی تجویز کردہ ہوتی […]

The post زینٹک ٹیبلٹ ; کینسر کی مہلک بیماری کا باعث appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
zantac

زینٹک ٹیبلیٹ کا استعمال بہت عام ہے اور معدہ سے جڑی اکثر بیماریوں کا علاج اس ٹیبلیٹ سے کیا جاتا ہے۔اس ٹیبلیٹ کا استعمال کئی سالوں سے دنیا بھر میں ہورہا ہے ۔ معدہ کے السر کے علاج کے لئے یہ دوا قلیل مدت تک استعمال کی جاتی ہے۔ یہ دوامعالج کی تجویز کردہ ہوتی ہے اور بنا معالج کے مشورہ کے اس کے استعمال سے منع کیا جاتا ہے۔ یہ دوا معدہ میں تیزاب کی مقدار کو کم کرکے بد ہضمی اور جلن کی تکلیف سے نجات دلاتی ہے۔ ساتھ ساتھ یہ نہ صرف معدہ میں تیزابیت کے  مسئلے کو دور کرتی ہے بلکہ معدہ کی سوزش کو بھی کم کرتی ہے۔ لیکن حال ہی میں ہونے والی ایک تحقیق کے بعد اس دوا پر بہت سے سوالات اٹھیں ہیں۔

ٓامریکی ادارے ایف ڈی اے کی جانب سے حالیہ تحقیق میں زینٹک ( رینیٹی ڈائن )میں مضر صحت اجزا سامنے آئیں ہیں ۔ اس دوا میں این نائٹرو سوڈ یمیتھلایمین( این ڈی ایم اے ) کی آمیزش ممکنہ طور پر کینسر کی مہلک بیماری کا باعث بن سکتی ہے۔ اس تحقیق کے بعد فوری طور پر دوسری دواؤں پر بھی پابندی لگائی گئی ہے جس میں این نائٹرو سوڈ یمیتھلایمین شامل ہوتے ہیں ۔ اس تحقیق کے سامنے آنے کے بعد دنیا بھر سمیت پاکستان میں بھی اس دوا پر عارضی پابندی لگا دی گئی ہے۔ اس دوا کے استعمال کرنے والے مریض بھی اس تحقیق کے بعد ذہنی کوفت کا شکار ہوگئے ہیں۔

ملک بھر میں ڈرگ ریگولیٹری اتھارٹی آف پاکستان (ڈریپ) نے ’زینٹک‘ دوا کی فروخت پر فوری طور پر پابندی کا نوٹیفکیشن جاری کر دیا ۔ڈریپ کی جانب سے جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق رینیٹی ڈائن ایچ سی ایل کے حامل ادویات کی ملک بھر میں فروخت پر فوری طور پر عارضی پابندی عائد کردی گئی ہے ۔نوٹیفکیشن میں بتایا گیا ہے کہ  ملک بھر میں یہ دوا’زینٹک‘ کے نام سے فروخت کی جاتی ہے لہذا ڈریپ کی جانب سے زینٹک کی فروخت پر فوری طور پر پابندی کا نوٹیفکیشن جاری کیا گیا ہے۔ ڈریپ کی جانب سے جاری نوٹیفکیشن میں بتایا گیا ہے کہ ڈریپ عالمی اداروں کے ساتھ مل کر مریضوں کی صحت کا پھرپور خیال رکھتا ہے۔


The post زینٹک ٹیبلٹ ; کینسر کی مہلک بیماری کا باعث appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
وہ علامات جو بریسٹ کینسر کی نشاندہی کرتی ہیں https://htv.com.pk/ur/womens-health/breast-cancer-symptoms Mon, 26 Aug 2019 08:47:08 +0000 https://htv.com.pk/ur/?p=34071 breast cancer symptoms in urdu

بریسٹ کینسر کا شمار خطرناک بیماریوں میں ہوتا ہے، اور دنیا بھر میں لاکھوں خواتین اس بیماری میں مبتلا ہیں۔ایک رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں ہر ایک لاکھ خواتین میں سے لگ بھگ 111 خواتین اس بیماری کا شکار ہوتی ہیں، جب کہ کچھ ممالک میں اس کی شرح اس سے کم بھی ہے۔بریسٹ […]

The post وہ علامات جو بریسٹ کینسر کی نشاندہی کرتی ہیں appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
breast cancer symptoms in urdu

بریسٹ کینسر کا شمار خطرناک بیماریوں میں ہوتا ہے، اور دنیا بھر میں لاکھوں خواتین اس بیماری میں مبتلا ہیں۔ایک رپورٹ کے مطابق دنیا بھر میں ہر ایک لاکھ خواتین میں سے لگ بھگ 111 خواتین اس بیماری کا شکار ہوتی ہیں، جب کہ کچھ ممالک میں اس کی شرح اس سے کم بھی ہے۔بریسٹ کینسر کی مریض خواتین نہ صرف پسماندہ اور ترقی یافتہ ممالک میں پائی جاتی ہیں، بلکہ حیران کن طور پر ترقی پذیر ممالک کی خواتین بھی اس مرض میں زیادہ مبتلا ہوتی ہیں۔

پاکستان میں ہر 8 ویں خاتون کسی نہ کسی طرح کی بریسٹ کینسر میں مبتلا ہے، جب کہ سالانہ  4سینکڑوں خواتین اس مرض کے باعث ہلاک ہوجاتی ہیں۔بریسٹ کینسر موذی بیماری ہے، لیکن اگر شروع سے ہی اس کا علاج کیا جائے تو اس پر قابو پایا جاسکتا ہے۔ماہرین کے مطابق زیادہ تر خواتین کو اس بات کا اندازہ ہی نہیں ہوتا کہ ان میں حیران کن تبدیلیاں اسی وجہ سے ہی ہو رہی ہیں کہ ان میں بریسٹ کینسر کے مرض کا خدشہ ہے۔

ہر بیماری کی طرح بریسٹ کینسر کی بھی کچھ ایسی واضح اور عام علامات ہیں، جو اس بات کی نشاندہی کرتی ہیں کہ بریسٹ کینسر کا مرض شروع ہو رہا ہے۔درج ذیل علامات بریسٹ کینسر کی نشاندہی میں مدد گار ثابت ہوسکتی ہیں، تاہم علامات ظاہر ہونے کے بعد فوری طور پر اپنے معالج سے رجوع کیا جائے، تاکہ کسی بھی خطرے کے مقابلے کے لیے وقت سے پہلے تیاری کی جاسکے اعر مستقبل میں بڑے خطرے سے بچا جاسکتا ہے۔


ماہواری یا حیض وقت پہ نہ ہوں تو ۔۔۔


وزن کا بڑھنا، کمر کا پھیلنا۔
چھاتی کی جلد پر جلد جیسی ایک اور باریک تہ کا بننا۔
چھاتی کے دونوں اطراف کے درمیان واضح فرق ہوجانا۔
مسلسل ہڈیوں، جوڑوں، جسم کے دیگر حصوں اور سر میں درد رہنا۔
چھاتی کے ارد گرد جلد میں ڈمپل پڑ جانا یا جلد میں جھریوں کا پیدا ہونا۔
پیٹ کے اوپر چھاتی کے ارد گرد جسم کے کسی بھی حصے میں مسلسل درد رہنا۔
بازووں اور چھاتی کے ارد گرد والی جلد پر زخم جیسے نشانات پیدا ہونا، اور ان سے گندگی کا نکلنا۔

یہ علامات اس امکان کو ظاہر کرتی ہیں کہ متاثرہ شخص بریسٹ کینسر کا شکار ہونے والا ہے، تاہم ڈاکٹر مانتے ہیں کہ ان علامات کا بعض مرتبہ کچھ اور مطلب بھی ہوتا ہے۔اس لیے ایسی اور ان سے ملتی جلتی علامات کے بعد اپنے قریبی معالج اور خصوصی طور پر کینسر اور ماہر امراض جلد سے رابطہ کیا جائے۔


سر چکرانے کی چند وجوہات یہ بھی ہوسکتی ہیں


The post وہ علامات جو بریسٹ کینسر کی نشاندہی کرتی ہیں appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
میٹا اسٹیٹک بریسٹ کینسر ،علامات https://htv.com.pk/ur/health/metastatic-cancer Mon, 17 Jun 2019 06:50:03 +0000 https://htv.com.pk/ur/?p=33297 metastatic cancer

میٹا اسٹیٹک بریسٹ کینسر ،چھاتی سے شروع ہوکر جسم کے دوسرے حصوں میں پھیلنا شروع ہو جاتا ہے۔یہ بریسٹ کینسر کا چوتھا اسٹیج کہلاتا ہے۔اس بیماری کو ختم تو نہیں کیا جاسکتا لیکن اس کے صحیح علاج کے ذریعے زندگی کے کچھ سال بڑھ ضرور سکتے ہیں ۔اسٹیج ۴ کے شروع ہونے کے بعد مریض […]

The post میٹا اسٹیٹک بریسٹ کینسر ،علامات appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
metastatic cancer

میٹا اسٹیٹک بریسٹ کینسر ،چھاتی سے شروع ہوکر جسم کے دوسرے حصوں میں پھیلنا شروع ہو جاتا ہے۔یہ بریسٹ کینسر کا چوتھا اسٹیج کہلاتا ہے۔اس بیماری کو ختم تو نہیں کیا جاسکتا لیکن اس کے صحیح علاج کے ذریعے زندگی کے کچھ سال بڑھ ضرور سکتے ہیں ۔اسٹیج ۴ کے شروع ہونے کے بعد مریض کتنا جئے گا اس کا دارومدار اس کے مرض کی نوعیت پر ہوتا ہے۔
تحقیق سے ثابت ہوا ہے کہ میٹااسٹیٹک بریسٹ کینسر کے ۲۷ فیصد مریض ۵ سال یا اس سے بھی زیادہ عرصے تک زندہ رہتے ہیں ۔جدید طریقہ علاج کی بدولت میٹا اسٹیٹک بریسٹ کینسرکے مریضوں کی زندگی میں مزید اضافہ ہوسکتا ہے اور ان کا طرز زندگی بہتر ہو سکتا ہے۔

میٹا اسٹیٹک بریسٹ کینسر کیا ہے؟

کینسر میٹا اسٹیٹک اس وقت بن جاتا ہے جب یہ اپنی اصل جگہ سے نکل کر دوسرے حصوں میں پھیلنا شروع ہو جاتا ہے۔بریسٹ میں شروع ہونے والا کینسر ان حصوں تک پھیل سکتا ہے ۔
۔ہڈیاں
۔دماغ
۔پھیپھڑے
۔جگر
اگر کینسر بریسٹ تک محدود رہے تو اس سے زندگی کو خطرہ نہیں ہوتا ۔اگر یہ بڑھ لمف نوڈز تک چلا گیا ہے تب بھی اس کا علاج ممکن ہے۔لہٰذا بریسٹ کینسر کی ابتدا میں ہی تشخیص اور علاج نہایت اہمیت کے حامل ہیں۔بریسٹ کینسر کاکامیاب علاج جسم سے کینسر کو بالکل ختم کرسکتا ہے۔لیکن اس بات کی کوئی گارنٹی نہیں ہوتی کہ کچھ مہینوں یا سالوں بعد یہ بیماری جسم میں واپس نہیں آئے گی۔

علامات:

۔تھکن محسوس ہونا
۔توانائی کی کمی
۔طبیعت ناساز ہونا
۔بھوک کی کمی

بریسٹ کینسر کہاں تک پھیل سکتا ہے:

بریسٹ سے بڑھ کر کینسر لمف نوڈز،ہڈیوں،جگر اور پھیپھڑوں تک جاسکتا ہے۔ہر حصے میں کینسر کی موجودگی کی علامات مختلف ہوتی ہیں ۔یہ بھی ضروری نہیں کہ مریض میں یہی تمام علامات ظاہر ہوں بہر حال ایسی کوئی بھی علامت جو آپ کے لئے پریشانی کا باعث بنے اس کے لئے ڈاکٹر کو دکھانا ضروری ہے۔


کیا چائے کی عادت کینسر کا باعث بن سکتی ہے؟

لمف نوڈز میں جانے والے کینسر کی علامات:

لمف نوڈز جسم میں موجودٹیوبس اور گلینڈز پر مشتعمل ہوتے ہیں جو جسم میں موجود فلوئڈ کو صاف کرتے ہیں اور انفیکشن کا مقابلہ کرتے ہیں ۔کینسر کے لمف نوڈز تک پہنچنے کی سب سے عام علامت سوجن یا سختی محسوس ہونا ہے۔ لمف نوڈز میں کینسر کی موجودگی کی یہ علامات ظاہر ہو سکتی ہیں َ
۔بغل میں سوجن یا گلٹی محسوس ہونا
۔بازو یا ہاتھ پر سوجن آجانا
۔ہنسلی کی ہڈی کے آس پاس سوجن یا گلٹی محسو س ہونا ۔
سب سے پہلے بریسٹ کینسر پھیل کر اسی بریسٹ کی طرف کے لمف نوڈ میں جاتا ہے۔

کینسر کے ہڈیوں میں جانے کی علامات:

کینسر کے ہڈیوں میں جانے کی وجہ سے یہ علامات ظاہر ہوتی ہیں ۔
۔متاثرہ ہڈی میں درد یا ٹیسیں اٹھنا
۔ہڈیاں کمزور ہوجانا اور معمولی چوٹ سے ٹوٹ جانا
جب کینسر سے ہڈیوں کو نقصان پہنچنے لگتا ہے تو ان کا کیلشیئم نکل کر خون میں شامل ہونے لگتا ہے اور یہ علامات ظاہر ہوتی ہیں ۔

۔تھکن
۔طبیعت ناساز ہونا
۔قبض
۔بے چینی
۔پیاس
۔الجھن محسوس ہونا

کینسر کے جگر تک پہنچنے کی علامات:

اگر کینسر جگر تک پہنچ گیا ہے تو یہ علامات یا ان میں سے کچھ ظاہرہو سکتی ہیں ۔
۔تھکن ۔
۔پیٹ کے دائیں حصے میں( جہاں جگر ہوتا ہے)بے چینی یا درد ہونا ۔
۔طبیعت گری ہوئی(متلی) محسوس ہونا
۔بھوک نہ لگنا
۔پیٹ پھولنا
۔جلد پر زردی آجانا یا خارش ہونا

اگر کینسر پھیپھڑوں میں چلا جائے:

اگر کینسر پھیپھڑوں میں چلا جائے تو یہ علامات ظاہر ہو سکتی ہیں ۔
۔نہ ختم ہونے والی کھانسی ہونا
۔سانس نہ آنا
۔سینے میں مستقل انفیکشن رہنا
۔کھانسی کے ساتھ خون آنا
۔سینے اور پھیپھڑوں کے درمیان پانی بھر جانا

کینسر کے دماغ میں چلے جانے کی علامات:

دماغ میں چلے جانے والے کینسر کی علامات کا انحصار اس جگہ پر ہوتا ہے جہاں کینسر واقع ہوا ہے۔دماغ کے کینسر کی یہ علامات ظاہر ہو سکتی ہیں۔
۔سر میں در اور طبیعت گری ہوئی محسوس ہونا
۔ہاتھوں اور ٹانگوں میں کمزوری یا سن پن محسوس ہونا
۔یادداشت کمزور ہونا
۔روئیے میں تبدیلی آنا
۔نظر کمزور ہونا


مزید جانئے :آنکھوں کا انفیکشن،احتیاط اور علاج


The post میٹا اسٹیٹک بریسٹ کینسر ،علامات appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>
کیا چائے کی عادت کینسر کا باعث بن سکتی ہے؟ https://htv.com.pk/ur/health/tea-addiction Wed, 10 Apr 2019 07:21:05 +0000 https://htv.com.pk/ur/?p=32618

مارچ2009میں بی بی سی نیوز کی ہیڈلائن نظر سے گزری کہ ـــــ’’کھولتی ہوئی چائے کینسر کا باعث بن سکتی ہے۔‘‘اسی ماہ میں دی ٹائمز نے ایک آرٹیکل شائع کیا جس کا عنوان تھا کہ’’بہت زیادہ گرم چائے یا کافی غذا کی نالی کے کینسر کا باعث بنتی ہے۔‘‘ اسی طرح ڈیلی ایکسپریس نے ایک کہانی […]

The post کیا چائے کی عادت کینسر کا باعث بن سکتی ہے؟ appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>

مارچ2009میں بی بی سی نیوز کی ہیڈلائن نظر سے گزری کہ ـــــ’’کھولتی ہوئی چائے کینسر کا باعث بن سکتی ہے۔‘‘اسی ماہ میں دی ٹائمز نے ایک آرٹیکل شائع کیا جس کا عنوان تھا کہ’’بہت زیادہ گرم چائے یا کافی غذا کی نالی کے کینسر کا باعث بنتی ہے۔‘‘ اسی طرح ڈیلی ایکسپریس نے ایک کہانی چلائی کہ ’’گرم چائے پینے سے آپ کو کینسر ہو سکتا ہے۔‘‘برٹش میڈیکل جرنل میں شائع ہونے والاایک آرٹیکل جس میں چائے اور کینسر کے درمیان تعلق بتایا گیا تھا سب کا موضوع بحث بن گیا۔
جیسا کہ 2009میں ہونے والی تحقیق کی بنیاد چائے پینے والے لوگوں سے سوالات تھے جن میں کینسر کہ مریض بھی شامل تھے۔اس طرح اس کے نتائج کا دارومدار لوگوں کے جوابات پر تھا ۔تحقیق میں شامل لوگوں سے ان کی چائے کی قسم،مقدار اور درجہ حرارت کے بارے میں سوال کئے گئے۔لہٰذا نتائج کا پورا دارومدارلوگوں کی یادداشت اور احساس پر تھا ۔جیسے اگر کسی کے لئے چائے گرم تھی تو وہی درجہ حرارت کسی کے لئے بہت زیادہ گرم تھا۔اس طرح یہ تحقیق جانب دار واقع ہوئی۔
مارچ ۲۰۱۹ میں کی گئی ایک تحقیق کے مطابق جو لوگ 20 ڈگری یا اس سے زیادہ درجہ حرارت پر روزانہ 700 ملی گرام چائے پیتے ہیں ان میں غذا کی کی نالی کے کینسر کے امکانات 41فیصد تک بڑھ جاتے ہیں ۔
ان کی تحقیق کو مزید تقویت اس وقت ملی جب 2009کے تحقیق دانوں نے تحقیق میں شامل لوگوں کو اس مشاہدے پر رکھا کہ آئندہ دس سالوں میں چائے پینے والے ان لوگوں میں سے کتنے لوگ کینسر کا شکار ہوئے۔انھوں نے اس بات کی بھی وضاحت کی کہ 25ڈگری سے زیادہ درجہ حرارت والی چائے کو بہت گرم کہا گیا تھا۔

اثرات :

ایسے ملک کے باشندے ہونے کے ناتے جس کی اکثریت چائے کی شوقین ہے۔یہ خبر ہم میں سے اکثر لوگوں کے لئے خطرے کی گھنٹی ہے۔ہمارے گھروں میں گرم چائے کے ایک کپ کو تسکین اور گرمائی کی علامت سمجھا جاتا ہے۔شدید سر درد میں چائے درد میں کمی لاتی ہے۔مشکل وقت میں ذہنی دبائو کو کم کرتی ہے اورکسی کے ساتھ تنازعہ کو کم کرنے کی بھی طاقت رکھتی ہے۔چائے کا ایک کپ ہمارے لئے اس دوست کی طرح ہے جو ہر مشکل میں ہمارے ساتھ ہوتا ہے پھر یہ سوچنا کہ چائے کا کپ ہمارے لئے نقصان دہ ہے بالکل ہی ناقابل فہم بات لگتی ہے۔


اس بارے میں جانئے : گردوں کو نقصان پہنچانے والی 8 غذائیں

حقیقت:

نیشنل کینسرانسٹیٹیوٹ اور بین الاقوامی ادارہ برائے تحقیقات کے باہمی تعاون سے کینسر سے متعلق اس تحقیق کا طریقہ کار تیار کیا گیا۔باوجود اس کے کہ اس تحقیق کا ہماری زندگیوں پر کیا اثر پڑے گا یہ ریسرچ کی گئی۔
۱۔ایران کے صوبے گولستان میں اس تحقیق کا آغاز کیا گیا جہاںغذا کی نالی کے کینسر کے زیادہ مریض پائے گئے تھے۔کینسر کی وجہ نسل میں چلنے والی بیماری بھی ہو سکتی تھی اس طرح ایرانیوں پر گرم چائے کے اثرات دوسری آبادی سے مختلف ہوسکتے تھے۔

۲۔کینسر کی وجہ 700ملی گرام چائے تھی جو 4 کپ کے برابر ہوتی ہے اور اس کا درجہ حرارت 20ڈگری یعنی انتہائی گرم ہوتا ہے۔تحقیق کے نتائج سے یہ بات سامنے آئی کے جو لوگ اس سے کم مقدار اور کم درجہ حرارت کی چائے پیتے ہیں وہ اس کینسرکے خطرے سے کافی حد تک محفوظ ہیں۔

احتیاط:

دس سال پر مبنی اس تحقیق سے یہ ثابت ہوا کہ زیادہ مقدار میں بہت زیادہ گرم چائے پینے کی وجہ سے ایرانی آبادی میں غذا کی نالی کے کینسر کے خطرات بڑھ گئے ہیں ۔اس کے علاوہ 700ملی گرام اور 60ڈگری سے کم درجہ حرارت کی چائے پینے سے کینسر کے خطرات ظاہر نہیں ہوئے۔لہٰذا کینسر سے حفاظت کا سب سے آسان طریقہ یہ ہے کہ چائے نکالنے کے بعد اسے کچھ دیر رکھ کر یا دودھ ملا کر ٹھنڈا کر لیا جائے۔


مزید جانئے :وہ 7غلطیاں جو مستقبل میں مرووں کے لئے خطرناک ہوسکتی ہیں۔

سبق:

یہ بات ذہن میں رکھیں کہ مارچ 2019میں دی ٹائمز میں شائع ہونے والاآرٹیکل جس کا موضوع تھا کہ ’’اپنی چائے میں تھوڑا سا دودھ ڈال کر آپ حلق کے کینسر کے خطرات سے بچ سکتے ہیں۔‘‘چائے میں دودھ ملاکر کینسر کے خطرے کو کم کرنے کے سب سے سادہ طریقہ کے ذریعے مایوسی کے بجائے امید بڑھے گی۔
دنیا بھر میں تیزی سے بڑھتی کینسر کی بیماری کی وجوہات جاننے کے لئے طبی اداروں کی کوششیں جاری ہیں اور اس سلسلے میں مدد دینے والی معمولی سی تحقیق بھی بہت اہمیت کی حامل ہے۔اس لئے ضروری ہے کہ اخبارات اور ویب سائٹس پر اس موضوع پرہونے والی بات کو تجربات اور حقائق کی روشنی میں پیش کیا جائے ۔کیونکہ یہ بات قابل شرم ہوگی اگر کوئی تحقیق ہمارے لئے مددگار ہونے کے بجائے پریشانی کا باعث بن جائے خاص کر جب ہم سکون حاصل کرنے لئے چائے کا ایک کپ بھی نہ پی سکیں۔


اس آرٹیکل کو انگریزی میں پڑھنے کے لیے کلک کریں

The post کیا چائے کی عادت کینسر کا باعث بن سکتی ہے؟ appeared first on ایچ ٹی وی اردو.

]]>