وٹامن B12 کی کمی ! آپ کے خیال میں زیادہ عام ہے۔

1,279

وٹامن b١٢ ایک ضروری غذائیت ہے جو ہمارے جسم کے اندر بہت اہم عمل متاثر کرتی ہے۔ ہمارے جسم کے تمام حصوں کو آکسجن کی نقل و حرکت کی ضرورت ہے ۔جس میں خون کے سرخ خلیات کی تشکیل، اور آپ کے ڈی اے این کی تعمیر بھی شامل ہے۔یہاں ہم خاص طور پر وٹامن b١٢ کو اجاگر کر رہے ہیں۔کیونکہ یہ ایک اہم مرحلے میں ہی ترقی کرسکتا ہے۔ اس سے پہلے اس کی کم ایک مرحلہ تک محدود تھی۔

مندرجہ ذیل معلومات کیلئے اسے ذرا احتیاط سے پڑھیں آپ وٹامن B12 کی افادیت کی سطح کا تعین کرنا چاہتے ہیں۔ اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کرتے وقت کسی قسم کی ہچکچاہٹ نہ کریں۔ ایک خون کی جانچ پڑتال کرنے کیلئے آپ کو آپ کے جسم کی وٹامنوٹامن b١٢کی حیثیت کا تعین کرنے کی ضرورت ہے۔

وٹامن B12 کی کمی ! وجوہات کیا ہیں ؟

۱ ایک محتاط تاریخ اور باقاعدہ خون کے ٹیسٹ ، خون میں کمی کی طرف اشارہ کرتے ہیں۔ مندرجہ ذیل فہرست میںوٹامن b١٢
کی کمی کی سب سے عام وجوہات پر مشتمل ہے۔

۲ جراحی کے طریقہ کار سے چھوٹی آنت یا پیٹ کا ایک حصہ ہٹادیا گیا ۔

۳ ایسڈ ادویات کم کرنے

۴ خرابی کی شکایات جیسے مدافعاتی نظام جیسے لوپس اور دوسری بیماریاں۔

۵ بھاری شراب کی انٹیک

۶ اٹروفک گیسٹرک پیٹ کی جھلی کی خرابی

۷ نقصان دہ خون ( وٹامن b١٢ کے خون کو کافی مقدار میں جذب کرنے کا عمل)

اس طرح کی چھوٹی بیماری جیسا کہ کرون ، پیراسائیٹ، جو بیکٹیریا کو بڑھنے میں مدد کرتے ہ

۸ ایک بھرپور غذا کے بعدوٹامن b١٢  براہ راست یا بالواسطہ طور پر اس طرح کے گوشت ، سمندری غذا، انڈے، اور

دودھ کی مصنوعات کے طور پر جانوروں سے حاصل کیا جاتا ہے۔کھانے کی مصنوعات کے ذریعے ہی دستیاب ہے۔

وٹامن B12 کی کمی ! علامات کیا ہیں ؟

وٹامن b١٢ کی اس کمی کو فوری طور پر توجہ دینے کی ضرورت ہے۔ کیونکہ یہ شدید اثرات معمولی علامات کے ساتھ پیش کرسکتے ہیں۔ مندرجہ ذیل میں ہم سب سے کم ظاہر کرنے والے علامات بتارہے ہیں۔
۱ ریبڈ دل کی ڈھڑکن

۲ ریبڈ سانس لینا

۳ جلد کا پیلا ہونا ظاہر ہو

۴ کمزوری، تھکاوٹ اور روشنی کا احساس ہونا۔

۵ گلے اور زبان

۶ اسہال یا کیج

۷ وزن میں غیر متوقع کمی

۹ خون آسانی سے نکلنا شروع ہوجاتا ہے۔ (اکثر مریضوں کی رپورٹ کے مطابق مسوڑوں سے خون آتا ہے)

 

وٹامن B12 کی کمی ! علاج کیا جاسکتا ہے۔

مرض کی بروقت تشخیص ہو تو کوئی وجہ نہیں ہے کہ ہم اس کا علاج نہیں کرسکتے۔اب یہ آپ کے ڈاکٹر پر انحصار کرتا ہے کہ وہ کون سا سپلمنٹ آپ کے لیئے منتخب کریگا یا کون سا انجکشن کتنی مدت کیلئے آپ کو تجویز کریگا۔جانور کی مصنوعات کو غذا میں شامل نہیں کیا جاسکتا تو وٹامن b١٢کے قسم کی دیگر اقسام کو سپلیمنٹ کے طور پر دیا جانا چاہیئے۔اس بات کو اچھی طرح ذہن نشیں کرلیں کہ وٹامن b١٢کی کمی آپ کے اعصاب کوپہنچنے والے نقصان کا سبب بن سکتی ہے۔

آخر میں آپ پر انحصارکرتا ہے کہ آپ کسی بھی علاج اختیار کرنے کے بارے میں سوچ رہے ہیں تو سب سے پہلے اپنے ڈاکٹر سے مشورہ کریں کہ یہ آپ کے لیئے کس حد تک مفید ثابت ہوگا۔

وٹامن B12 کی کمی ! احتیاط علاج سے بہتر ہے۔

اگر آپ میں بے چینی اور تکلیف کی وجہ سے پہلے سے علامات قائم ہیں تو کیا وجہ ہے کہ آپ احتیاط نہیں کرینگے۔کیونکہ وٹامن b١٢ سے بچنے کیلئے صرف چند احتیاطی اقدامات ناکافی ہوتے ہیں۔
۱ آپ سبزی خور نہیں ہیں تو آپ کو پابندی سے کھانے میں سوچ سمجھ کر غذا لینا چاہیئے بلکہ اپنی خوراک کا نئے طریقے سے

ٹائم ٹیبل بنائیں۔جس میں گوشت، چکن، سمندری غذا اور دودھ سے بنی ہوئی غذائیں شامل ہو

۲ ایک سبزی خور کے طور پر آپ اپنے ڈاکٹر سے ضرور مشورہ کریں۔جو آپ کے جسم کے حساب سے آپ کو مناسب وٹامن b١٢ فراہم کرسکتے ہیں۔ اس کے علاوہ آپ وٹامن b١٢ اپنی غذایئت سے بھر پورخوراک میں شامل کرسکتے ہیں۔

۳ اگر آپ طبی حالات سے دوچار ہیں تو ایک متبادل مونڈ کے لئے اپنے جسم کو وٹامن b١٢ کی مناسب مقدار فراہم کرسکتے ہیں۔

آپ کو اپنی صحت کے بارے میں انتہائی چوکس رہنے کی ضرورت ہے اور آپ کو اس بات کا احساس ہونا چاہیئے کہ آپ خوراک میں کون سی وٹامن لے سکتے ہیں ان تمام سوالات کے جوابات کیلئے آپ اپنے ڈاکٹر سے رجوع کریں۔

 

شاید آپ یہ بھی پسند کریں
تبصرے
Loading...